اردوسائنس بورڈ 1962 میں  آئینی ضرورت کو مدنظر رکھتے ہوئے ’’مرکزی بورڈ برائے ترقی اردو‘‘ کے نام سے قائم کیاگیا۔1984 میں بورڈ کے مقاصد میں ترمیم کر کے اس کانام’’اردوسائنس بورڈ‘‘رکھ دیا گیا۔2004 میں وزارت تعلیم نے اردوسائنس بورڈکو ماتحت ادارے کی حیثیت دے دی۔اس وقت بورڈ وزارت اطلاعات، نشریات وقومی ورثہ کے قومی تاریخ وادبی ورثہ ڈویژن کے ماتحت ادارے کے طورپر کام کر رہا ہے۔بورڈکا صدردفتر299۔اپرمال، لاہورمیں واقع ہے  جبکہ اس کے تین علاقائی دفاترپشاور، کوئٹہ اورحیدرآبادمیں قائم  ہیں۔ اردوسائنس بورڈنے عمرٹاور، حق سٹریٹ ، اردوبازارلاہورمیں کتب کی فروخت کے لیے سیل پوائنٹ بھی قائم کیاہے۔

 

اردوسائنس بورڈنے اب تک آٹھ سوسے زائد کتابیں ،انسائیکلوپیڈیاز، لغات اورتعلیمی چارٹس شائع کیے ہیں ۔ بورڈنے دس جلدوں پر مشتمل اردوسائنس انسائیکلوپیڈیاتیارکیا۔ اس میں خوبصورت تصاویر، ڈایاگرامزاورسائنسی معلومات شامل ہیں ۔یہ ثانوی اوراعلیٰ ثانوی سطح کے طلبا، اساتذہ اورتحقیق دانوں کے ساتھ ساتھ عام افرادکے لیے بھی یکساں مفید ہے ۔اردوسائنس بورڈسہ ماہی اردوسائنس میگزین  بھی باقاعدگی سے شائع کرتاہے ۔